You are here: فلسطین فلسطین میں امریکی اقدام کے خلاف’یوم الغضب‘ شہر شہر احتجاج جاری
 
 

فلسطین میں امریکی اقدام کے خلاف’یوم الغضب‘ شہر شہر احتجاج جاری

E-mail Print PDF

0Pala9392مقبوضہ بیت المقدس - (فلسطین نیوز۔مرکز اطلاعات) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے گذشتہ روز مقبوضہ بیت المقدس کو صیہونی ریاست کا دارالحکومت قرار دیے جانے کے اعلان پر فلسطین بھر میں شدید رد عمل سامنے آیا ہے۔ آج جمعرات کو فلسطین میں مذہبی اور سیاسی جماعتوں کی اپیل پر ملک گیر ’یوم الغضب‘  منایا جا رہا ہے۔ فلسطین کے تمام بڑے اور چھوٹے شہروں میں امریکا کی اسرائیل نوازی کے خلاف عوام سڑکوں پرہیں۔ نظام زندگی مفلوج ہے۔

ملک کے تمام طبقات کی طرف سے آج ہڑتال اور احتجاج کای جا رہا ہے۔ فلسطینی شہروں میں  ہونے والے احتجاجی مظاہروں کے ذریعے فلسطینی عوام نےامریکی اقدام کو یکسر مسترد کرتے ہوئے القدس کی آزادی تک جدو جہد جاری رکھنے کے عزم کا اعادہ کیا ہے۔

فلسطین نیوز کو موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق غزہ کی پٹی، غرب اردن، بیت المقدس اور فلسطین کے دوسرے شہروں میں امریکی صدر ٹرمپ کی طرف سے القدس کو اسرائیلی ریاست کا دارالحکومت قرار دینے کے خلاف احتجاجی مظاہرے جاری ہیں۔

تاجر برادری نے آج ٹرمپ کے اقدام کے خلاف بہ طور احتجاج کاروباری سرگرمیوں کا بائیکاٹ کیا ہے۔ فلسطینی جامعامات اوراسکولوں میں تدریسی سرگرمیاں معطل ہیں۔

مشتعل مظاہرین نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے پتلے ، امریکی اور اسرائیلی پرچم نذرآتش کے ہیں۔ مشتعل مظاہرین نے مسلمان ممالک سے امریکا کا ہر سطح پر بائیکاٹ کا مطالبہ کیا ہے۔

دوسری جانب فلسطینی مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے اسرائیلی فوج طاقت کا وحشیانہ استعمال کیا۔