You are here: Home
 
 

آئرلینڈ عہدیدار کے دورہ رام اللہ پر اسرائیلی ریاست چراغ پا

E-mail Print PDF

0Pala10701مقبوضہ بیت المقدس (فلسطین نیوز۔مرکز اطلاعات) اسرائیل نے آئرلینڈ کے ایک سینیر عہدیدار کے فلسطینی اتھارٹی کے ہیڈ کواٹر رام اللہ کے دورے پر آئرش حکومت سے سخت احتجاج کیا ہے۔

فلسطین نیوز کو موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق آئرلینڈ کے دارالحکومت ڈبلن کے میئر مائیکل میک ڈونچا کے دورہ رام اللہ پر تل ابیب میں متعین آئرلینڈ کے سفیر کو دفتر خارجہ طلب کرکے باضابطہ احتجاج کیا گیا۔

اس موقع پر اسرائیلی حکومت کی طرف سے آئرش سفیر کو ایک احتجاجی یاداشت پیش کی گئی جس میں ڈبلن کے میئر کی رام اللہ میں ایک کانفرنس میں شرکت ’دشمنانہ‘ سرگرمی سے تعبیر کیا ہے۔

عبرانی نیوز ویب پورٹل ’0404‘ کے مطابق وزارت خارجہ نے تل ابیب میں متعین آئرش سفیر کو طلب کرکے مائیک ڈونچا کے دورہ رام اللہ پر احتجاج ریکارڈ کرایا۔

خیال رہے کہ ڈبلن کے میئر نے حال ہی میں رام اللہ میں فلسطینی اتھارٹی کے زیراہتمام ’القدس کا مقام و مرتبہ‘ کے عنوان سے منعقدہ ایک کانفرنس میں شرکت کی تھی۔ اس موقع پر رام اللہ بلدیہ اور ڈبلن نے متفقہ طور پر القدس کے بارے میں اسرائیلی اقدامات کو مسترد کردیا تھا۔

اسرائیلی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ ڈبلن کے میئر مائیک ڈونچا اسرائیل کے بائیکاٹ کی عالمی تحریک ’بی ڈی ایس‘ میں شامل رہ چکے ہیں۔ انہیں فلسطینی علاقوں میں داخل ہونے سے روکنے کے احکامات جاری کیے گئے تھے مگر بہ وجوہ ان پر عمل درآمد نہیں ہوسکا۔