You are here: فلسطین اسلامی تحریک کے رہنما کو صیہونی عدالت سے 8 سال قید
 
 

اسلامی تحریک کے رہنما کو صیہونی عدالت سے 8 سال قید

E-mail Print PDF

0Pala11465مقبوضہ بیت المقدس (فلسطین نیوز۔مرکز اطلاعات) اسرائیل کی مرکزی عدالت نے اندرون فلسطین کے رہائشی اور اسلامی تحریک کے رہنما کو 8 سال قید کی سزا کا حکم دیا ہے۔

فلسطین نیوز کو موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق 46 سالہ فراس عمری سنہ 1948ء کے مقبوضہ شہر صندلہ سے تعلق رکھتے ہیں۔ وہ سماجی تنظیم 'یوسف الصدیق' کے ڈائریکٹر ہیں اور اسرائیلی جیلوں میں قید فلسطینیوں کے حقوق کے لیے کام کرتے ہیں۔

عمری کی یہ پہلی گرفتاری نہیں۔ وہ ماضی میں بھی متعدد بار حراست میں لیے جاتے رہے ہیں۔ وہ اسرائیل کی طرف سے کالعدم قرار دی گئی اسلامی تحریک کے بھی سرگرم رہنما رہے ہیں۔

اسرائیلی پراسیکیوٹر جنرل نے فراس عمری کے خلاف عائد کردہ فرد جرم میں اسلامی تحریک کی سرگرمیوں میں حصہ لینے، صیہونی ریاست کی سلامتی کے خلاف کام کرنے، جنگ کے عرصے میں دشمن کی مدد کرنے اور ممنوعہ تنظیموں کے ساتھ تعاون کرنے کے الزامات عائد کیے گئے ہیں۔