You are here: Home
 
 

غزہ کے لیے قطر کی ڈیڑھ کروڑ ڈالر کی فوری امداد

E-mail Print PDF

0Pala112127دوحہ (فلسطین نیوز۔مرکز اطلاعات) خلیجی ملک قطر نے حسب معمول فلسطین کے محصور علاقے غزہ کی پٹی کے عوام کے لیے ایک کروڑ 50 لاکھ ڈالر کی فوری امداد فراہم کرنے کا اعلان کیا ہے۔

فلسطین نیوز کو موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق قطر کی سرکاری خبر رساں ایجنسی نے بتایا ہے کہ امیر قطر کی طرف سے غزہ کی  پٹی میں ترقیاتی فنڈ کے ضمن میں ڈیڑھ کروڑ ڈالر کی فوری امداد کا اعلان کیا ہے۔ اس امدادی پیکج کا مقصد بارہ سال سے اسرائیلی محاصرے کا سامنا کرنے والے غزہ کے عوام کی مالی اور معاشی مشکلات میں مدد فراہم کرنا ہے۔

خیال رہے کہ اسرائیل نے 2006ء میں غزہ کی پٹی پر اقتصادی پابندیاں عائد کردی تھیں۔ اسرائیل نے غزہ کے عوام کو یہ اجتماعی سزا اسلامی تحریک مزاحمت "حماس" کو پارلیمانی انتخابات میں بھاری مینڈیٹ کے ساتھ کامیاب کرانے کی پاداش میں دے رکھی ہے۔

گذشتہ برس 30 اپریل کو فلسطینی اتھارٹی نے بھی غزہ کی پٹی پر اقتصادی پابندیاں عائد کردی تھیں اور غزہ کے سرکاری ملازمین کی تنخواہیں اور دیگر مراعات کم کر دی تھیں۔

دو روز قبل قطر کی طرف سے غزہ کی پٹی میں بجلی کے بحران کے حل کے لیے ایندھن فراہم کیا تھا جس پر فلسطینی اتھارٹی کی طرف سے سخت ناراضی کا اظہار کیا گیا۔